حوثی اغوا شدہ یمنی ماڈل کے کنوارے پن کا ٹیسٹ لینے پر مجبور کریں گے، ایمنسٹی انٹرنیشنل

فوٹو: بشکریہ عرب نیوز

المکلہ: ایمنسٹی انٹرنیشنل نے جمعہ کے روز کہا کہ حوثیوں کے ہاتھوں اغوا ہونے والی یمنی ماڈل کا کنوارے پن کا ٹیسٹ لیا جائے گا۔ 

رائٹس گروپ نے ملیشیا پر زور دیا کہ وہ فوری طور پر اپنے منصوبوں کو روک دے۔

 ایمنسٹی انٹرنیشنل میں مشرق وسطیٰ اور شمالی افریقہ کے ڈپٹی ڈائریکٹر لین مالوف نے کہا کہ یمن کے حوثی ڈی فیکٹو حکام کو انتصار الحمادی کو زبردستی کنوارے پن کی جانچ کرنے کے تمام منصوبوں کو فوری طور پر روکنا ہوگا۔ حکام کی جانب سے انہیں یمن کے گہرے سربراہی معاشرے کے سماجی اصولوں کو چیلنج کرنے کی سزا دی جا رہی ہے جو خواتین کے خلاف امتیازی سلوک کو روکتے ہیں۔

حوثیوں نے اپنے زیر کنٹرول علاقوں میں ذرائع ابلاغ اور سوشل میڈیا صارفین پر الحمادی کے معاملے سے متعلق معلومات شائع کرنے یا شیئر کرنے پر پابندی عائد کر دی ہے۔ انہوں نے اس کے وکلاء پر بین الاقوامی خبررساں اداروں سے بات کرنے پر بھی پابندی عائد کردی ہے۔

مالوف نے مزید کہا کہ حوثیوں کے پاس بے بنیاد الزامات کے تحت لوگوں کو من مانی طور پر حراست میں لینے کا افسوسناک ٹریک ریکارڈ ہے تاکہ ناقدین، کارکنوں، صحافیوں اور مذہبی اقلیتوں کے ارکان کو خاموش یا سزا دی جا سکے اور ساتھ ہی انہیں تشدد اور دیگر قسم کے بدسلوکی کا نشانہ بنایا جا سکے۔

ماڈل کے وکیل خالد محمد الکمال نے کہا کہ حوثی پراسیکیوٹر نے میڈیا کوریج پر پابندی عائد کرنے کا حکم دیا ہے اور ان پر یا کسی اور شخص پر میڈیا سے بات کرنے پر پابندی عائد کر دی ہے۔ انہوں نے عرب نیوز سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ یہ قانون کے خلاف ہے۔ لیکن اس میں کوئی مسئلہ نہیں ہے کہ آیا اس سے اس کی رہائی ہوگی۔ “

20 سالہ ماڈل اور اداکارہ اور دو دیگر اداکارائیں فروری کو فلم کی شوٹنگ کے لئے جا رہی تھیں۔  جب مسلح باغیوں نے انہیں اغوا کر کے صنعا میں قید کر دیا۔ ان کے اغوا نے مذمت کو بھڑکایا اور ذرائع ابلاغ کی توجہ مبذول کرائی اور رائٹس کے کارکنوں نے مطالبہ کیا کہ ملیشیا کو دہشت گرد تنظیم قرار دیا جائے۔

اس کیس کی میڈیا کوریج سے چڑ کر حوثیوں نے ماڈل کی رہائی کا حکم دینے والے پراسیکیوٹر کو برطرف کر دیا، الحمادی کو قید تنہائی میں ڈال دیا اور الکمال پر مقدمہ ختم کرنے کے لیے دباؤ ڈالا۔ لیکن اس نے اس کا دفاع جاری رکھنے کا عہد کیا اور ضمانت پر بھی اس کی رہائی کا مطالبہ کیا اور کہا کہ وہ ہمیشہ روتی رہتی ہے اور حوثیوں کو اسے آزاد کرانے پر مجبور کرنے کے لئے بھوک ہڑتال کی دھمکی دی ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ میں ان کا وکیل ہوں اور آخری وقت تک ان کا دفاع کرتا رہوں گا۔ انہوں نے کہا کہ دیگر مقامی وکلاء نے ماڈل کے دفاع میں ان کا ساتھ دینے پر رضامندی ظاہر کی ہے۔ حوثیوں نے الحمادی کے خلاف واضح الزامات پیش نہیں کیے ہیں تاہم مقامی لوگوں کا کہنا ہے کہ یہ اغوا فنکاروں اور اداکاراؤں کے ساتھ ساتھ ان جگہوں کے خلاف اخلاقی کریک ڈاؤن کا حصہ ہے جہاں خواتین اور مردوں کے درمیان اختلاط تھا۔

دریں اثنا اقوام متحدہ کے یمن کے ایلچی مارٹن گریفتھس کے اس اعلان کے چند روز بعد کہ جنگ کے خاتمے کے لیے امن کوششیں تباہ ہو رہی ہیں، ماریب، جوف، ہودیدہ اور تائیز صوبوں میں لڑائی میں شدت آئی۔

مقامی ذرائع ابلاغ نے جمعہ کے روز بتایا کہ ہودیدہ میں حکومتی فورسز کی حوثیوں کے ساتھ حاس اور ہودیدہ شہر کے اندر مسابقتی علاقوں میں جھڑپیں ہوئیں۔

ملک کے مغربی ساحل پر تین بڑے فوجی یونٹوں جوائنٹ فورسز نے بتایا کہ 68 حوثی ہلاک اور 176 زخمی ہوئے ہیں۔ اسٹاک ہوم معاہدے کے تحت 2018 کے اواخر میں ہونے والا جنگ بندی بڑی حد تک ہودیدہ میں دشمنی روکنے میں ناکام رہا ہے۔

جنگ میں ہلاکتوں کو دستاویزی شکل دینے والے مقامی رائٹس گروپس نے بتایا کہ بارودی سرنگوں اور گولہ باری کی وجہ سے سیکڑوں شہری ہلاک ہوئے ہیں۔

ماریب میں یمن کی وزارت دفاع نے جمعہ کے روز کہا کہ باغیوں کے ماریب شہر کی طرف بڑھنے پر مشجاہ اور الکاسرا میں حوثیوں کے ساتھ فوجیوں کی جھڑپیں ہوئی ہیں۔ سرکاری ذرائع ابلاغ نے درجنوں فوجی گاڑیوں اور جنگجوؤں کو حوثیوں کو پیچھے دھکیلنے کے لئے میدان جنگ کی طرف جاتے ہوئے دکھایا۔ فروری کے اوائل سے اب تک ہزاروں جنگجو ہلاک ہو چکے ہیں جب حوثیوں نے ماریب پر قبضہ کرنے کے لیے جارحیت دوبارہ شروع کر دی تھی۔

اردو پبلشر کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں