افغانستان سے امریکی فوجیوں کا انخلا مئی میں مشکل ہے: جو بائیڈن

Urdu Publisher
image source by Google whitehouse
امریکی صدر جو بائیڈن کا کہنا ہے کہ ’یکم مئی کو افغانستان سے امریکی فوجیوں کا انخلا مشکل ہے۔
امریکی صدر نے امریکی نیوز چینل اے بی سی کو انٹرویو میں کہا کہ ’میں ابھی اس فیصلے پر غور کر رہا ہوں کہ انہیں (
امریکی صدر جو بائیڈن کا کہنا ہے کہ ’یکم مئی کو افغانستان سے امریکی فوجیوں کا انخلا مشکل ہے۔
کب نکلنا ہے۔‘
 افغانستان سے امریکی فوجیوں کا انخلا مئی میں مشکل ہے: جو بائیڈن
غیر ملکی امریکی افواج مئی کی ڈیڈ لائن کے بعد بھی افغانستان میں ہی رہیں گی- نیٹو ذرائع
انہوں نے سابق امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی جانب سے افغان طالبان کے ساتھ معاہدے پر ان کی انتظامیہ کی نظر ثانی کے حوالے سے کہا کہ ’حقیقت یہ ہے کہ سابق صدر کی جانب سے کیا جانے والا یہ معاہدہ  بہت اچھا نہیں تھا۔‘

اس خبر کو بھی پڑھیں: امریکی آرٹیفیشیل اِنٹیلیجنس سے لیس ہتھیاروں کی منظوری

جو بائیڈن نے مزید کہا کہ ’امریکی فوجیوں کے لیے یکم مئی کا انخلا کرنا مشکل ہو گا، یہ ہو سکتا ہے لیکن یہ مشکل کام ہے۔‘

اس حوالے سے جو بائیڈن کے قومی سلامتی کے مشیر جیک سلیوان نے بھی گذشتہ دسمبر میں خبردار کیا تھا کہ ’ٹرمپ انتظامیہ کی جانب سے اقتدار کی منتقلی میں عدم تعاون سے فوجیوں کے انخلا میں تاخیر ہو سکتی ہے۔

Source :

افغانستان سے امریکی فوجیوں کا انخلا مئی میں مشکل ہے: جو بائیڈن” ایک تبصرہ

اردو پبلشر کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں